پلاسٹک روڈ اسفالٹ یا تارکول کے مقابلے میں کم لاگت کا حامل منصوبہ

پلاسٹ روڈ

ولکر ویسلز نامی ہالینڈ کی تعمیراتی کمپنی نے ایک نیا منصوبہ پیش کیا ہے۔ اس منصوبہ کے تحت وہ سڑکوں کی تعمیر کے لئے پلاسٹ کا استعمال کرنے پر غور کررہے ہیں۔ اس منصوبے کے تحت وہ پلاسٹک کی بڑی بڑی ٹائلیں بنا کر ان کو آپس میں جوڑ کر نئی سڑکیں بنائیں گے۔ کمپنی  کے ترجمان کا کہنا تھا کہ انکی کمپنی کو ایسی سڑکیں بنانے کا خیال اس لئے آیا کہ بہت سے ممالک میں شہری ادارے بجٹ نہ ہونے کی وجہ سے سڑکوں کی تعمیر یا مرمت نہیں کرواپاتے جس کی وجہ سے کسی بھی وقت کسی بڑے حادثہ کا خدشہ لگا رہتا ہے۔ اسی مقصد کے لئے کمپنی نے پلاسٹک روڈ کا منصوبہ پیش کیا ہے۔

پلاسٹ کے روڈ اسفالٹ یا تارکول کے مقابلے میں سستا ہے اور ماحول دوست بھی ہے جبکہ اس کی مرمت میں بھی تارکول یا اسفالٹ کے مقابلے میں بہت کم لاگت آتی ہے۔ اسفالٹ یا تارکول کو جب گرم کیا جاتا ہے تو فضا میں بڑی تعداد میں نقصان دہ گیسوں کا اخراج ہوتا ہے جب کہ یہ ماحول دوست ہونگے کیونکہ انہیں ری سائیکل پلاسٹک سے تیار کیا جائے گا۔ اس طرح یہ ماحول دوست بھی ہونگے اور بار بار استعمال کرنے کے قابل بھی ہونگے۔

تعمیراتی کمپنی کے مطابق پلاسٹک روڈ ایک کم لاگت منصوبہ ہوگا۔ اس کے علاوہ اگر کسی سڑک کا کوئی حصہ خراب ہوجاتے ہے تو وہ حصہ نکال کر اس کی جگہ دوسرا حصہ لگایا جاسکتا ہے جو کہ عام سڑکوں کے مقابلہ میں کم لاگت ہے۔ پلاسٹک روڈ کی ایک اور خاصیت شدید درجۂ حرارت میں بھی اس کی شکل و صورت کا برقرار رہنا ہے۔ جب درجۂ حرارت 45 ڈگری سیلسیئس سے بڑھ جاتا ہے تو تارکول سے بنی سڑکیں اپنی شکل و صورت برقرار نہیں رکھ پاتیں۔
یہ گویا پگھلنے لگتی ہیں اور انھیں اصل حالت میں واپس لانے پر بھی کثیر رقم خرچ ہوتی ہے۔ اس کے برعکس پلاسٹک روڈ کے لیے تیار کی گئی ٹائلیں منفی 40 ڈگری سے لے کر 80 ڈگری سیلسیئس تک درجۂ حرارت برداشت کرسکیں گی۔ علاوہ ازیں ٹائلیں کم وزن ہوں گی، نتیجتاً عام سڑک کے مقابلے میں زمین پر کم بوجھ پڑے گا اور زیرزمین بجلی کی کیبلز اور پانی، گیس اور نکاسی آب کی لائنیں بچھانا بھی آسان ہوگا۔